مدرسہ جامعہ عربیہ رشیدیہ نگینہ میں بخاری شریف کی تکمیل

نگینہ/ جامعہ عربیہ رشیدیہ نگینہ میں آج دوپہر ایک جلسہ منعقد کیا گیا جس کی صدارت حضرت مولانا محمد شوکت صاحب افضل گڑھ نے کی نظامت مولانا حفظ الرحمن صاحب مدرس مدرسہ جامعہ عربیہ رشیدیہ نگینہ نے کی محفل کا آغاز قاری محمد دانش صاحب کی تلاوت سے ہوا اور نعت پاک حافظ محمد زید نے پیش کی ..
اور جامعہ کے طلباء ، عبد القادر ، محمد کامران ، محمد احتشام ،
محمد ثاقب ، محمد زید، محمد طالب ، محمد اعظم ، محمد الکیف ، محمد ،عفان وغیرہ نے تقریر پیش کر کے سامعین کے دلوں کو موہ لیا ہے ، مفتی کفیل احمد مظاہری نے ترانہ پڑھنے سے قبل جامعہ کی مختصر تاریخ پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ جامعہ عربیہ رشیدیہ ضلع بجنور کا واحد ادارہ ہے جس میں 38 سالوں سے بخاری شریف کا درس دیا جا رہا ہے اس سال بھی 11 طلباء عالم بن کر تیار ہوئے ہیں ۔
جلسے میں مہمان خصوصی کے طور پر آئے دارالعلوم دیوبند کے استاذ حدیث مولانا سلمان صاحب بجنوری نے طلباء کو بخاری شریف کا آخری سبق پڑھاتے ہوئے کہا کہ اللہ کی کتاب کے بعد اگر کوئی کتاب صحیح ہے تو وہ بخاری شریف ہے انہوں نے نماز پابندی سے پڑھنے پر توجہ دلائی اور کہا کہ قرآن و حدیث دونوں پر عمل کرنا چاہیے اگر قرآن پر عمل کیا اور حدیث کو چھوڑ دیا تو انسان گمراہ ہو جاتا ہے اسی طرح صرف حدیث پر عمل کرنے پر بھی انسان گمراہ ہو جاتا ہے انسان کو گمراہی سے بچنے اور درست راستہ پر چلنے کے لیے دونوں پر عمل کرنا ضروری ہے ..
جلسہ میں میمن سادات سے تشریف لائے مولانا کلیم الزماں نے تفصیل سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ مدارس اسلامیہ دین کے قلعے ہیں ان کی حفاظت کرنا ہماری ذمہ داری ہے اگر دین باقی ہے تو وہ انہیں مدرسوں سے باقی ہے ..
آخر میں مولانا سلمان صاحب بجنوری نے محمد عارف ، محمد حیدر ، محمد اعظم ، محمد اظہر ، شیخ جابر ، مشرف احمد ، اسحاق خان ، عبد النور ، محمد مشرف ، سعید شاہ اور افضل شاہ بخاری کا آخری سبق پڑھا کر دستار فضیلت سے نوازا اس موقع پر
مفتی محمد ارشد ، حافظ رفیق احمد ، قاری اسلام الدین ، مولوی عباس ، مولوی طیب، ڈاکٹر اسرار ، صوفی محمد شاہد ، مفتی شاہد ، مفتی محفوظ ، مفتی سفیان ، مفتی شاداب ، مفتی عظیم ، مفتی کفیل احمد ، مفتی نبیل احمد ، مولوی وکیل احمد ، وغیرہ کثیر تعداد میں لوگوں نے شرکت کی ….
آخر میں مولانا ڈاکٹر خلیق احمد صاحب قاسمی مہتمم مدرسہ جامعہ عربیہ رشیدیہ نگینہ تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا .
Please follow and like us:

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *